لودھراں میں 14 سالہ نوجوان اجتماعی زیادتی کے بعد قتل

لودھراں (جے ٹی این پی کے) 14 سالہ نوجوان اجتماعی زیادتی قتل

لودھراں میں 14 سالہ نوجوان کو اجتماعی زیادتی کرنے کے بعد قتل کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق قتل کیس کی 11 ماہ بعد فورنزک رپورٹ آنے کے بعد مقتول کی والدہ کی مدعیت میں قریبی رشتے دار کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پولیس اہلکارکی لڑکی سے زیادتی

مقتول کی والدہ کا کہنا ہے کہ بیٹے کو منصوبہ بندی سے اجتماعی زیادتی کرنے کے بعد قتل کیا گیا اور قتل کے بعد لاش کوگھر میں لٹکا کرخودکشی کا تاثردیا گیا۔

خاندانی رنجش پر چچی نے 2 سالہ بچے کو قتل کردیا

وہاڑی میں 2 سال کے بچے کی قاتل اس کی چچی نکلی۔

پولیس کے مطابق 2 سالہ حسیب گزشتہ صبح کھیلتے ہوئے گھرسے باہرنکل گیا تھا،

والد کے ڈھونڈنے پر بچے کی لاش گھر کے قریبی کھیت سے ملی تھی۔

پولیس کے مطابق قتل کی تحقیقات کی گئی تو پتا چلا کہ بچے کو اس کی چچی نے اپنے ماموں عابد کی مدد سے گلا دباکر قتل کیا

اور لاش گھر کے قریب کھیت میں پھینک دی۔

پولیس کے مطابق ابتدائی تفتیش سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ بچے کو خاندانی رنجش پر قتل کیا گیا ہے،

واقعہ کے بعد ملزمہ اور اس کے ماموں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

 


admin

پاکستان سمیت دنیا بھر میں ہونے والے اہم حالات و واقعات اور دیگر معلومات سے آگاہی کا پلیٹ فارم

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: