کم عمر محنت کش سری لنکن خواتین کو بیرون ملک ملازمت کی اجازت


مانیٹرنگ ڈیسک/ آئی آر خان :کم عمر محنت کش

سری لنکا نے کم عمر خواتین کو ملازمت کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دےدی گئی ہے،

اجازت کی وجہ غیر ملکی زرِمبادلہ ذخائر میں اضافہ کرنا ہے

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق معاشی بحران سے دو چار ملک سری لنکا نے کم عمر خواتین کو بیرون

ملک ملازمت کرنے کی اجازت دے دی ہے جو غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافے کا باعث بن سکتاہے۔

سری لنکا نے خواتین کےلئے بیرون ملک ملازمت کی مدت عمر کم کر کے21برس کر دی ہے ۔

بیرون ملک ملازمت کی خواتین عمر کم کرکے 21برس کر دی

خیال رہے 2013میں سری لنکا کی حکومت نے احکامات جاری کیے تھے کہ صرف 23برس سے زیادہ

عمر کی خواتین ملازمت کی غرض سے بیرون ملک جا سکتی ہیں۔تاہم سری لنکا کو درپیش شدید معاشی مشکلات کے

پیش نظر خواتین کی عمر سے متعلق شرائط میں نرمی کر دی گئی ہے۔حکومتی ترجمان بندولا گونا وردانہ نے

صحافیوں کو بتایا کہ کسی بھی بیرون ملک میں ملازمت کی کم سے کم عمر 21 برس کرنے کا فیصلہ

کابینہ نے کیا ۔یاد رہے کہ دیگر ممالک میں کام کرنے والے سری لنکن غیر ملکی زرمبادلہ کا

ایک اہم ذریعہ ہیں جو سالانہ 7 ارب ڈالر ترسیلات زر کی مد میں بھجواتے ہیں۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں، مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ جتن نیوز اردو انتظامیہ

کم عمر محنت کش

Imran Rasheed

عمران رشید خان صوبہ خیبر پختونخوا کے سینئر صحافی اور سٹوری رائٹر/تجزیہ کار ہیں۔ کرائمز ، تحقیقاتی رپورٹنگ ، افغان امور اور سماجی مسائل پر کافی عبور رکھتے ہیں ، اس وقت جے ٹی این پی کے اردو کیساتھ بحیثیت بیورو چیف خیبر پختونخوا فرائض انجام دے رہے ہیں ۔ ادارہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: