لاہور بورڈ: میٹرک سالانہ امتحانات کے نتائج کا اعلان، Dگریڈ طَلَباء کا استادپر تشددکی نئی مثال

ByLine Annie Khan

ایجوکیشن نیوز/ لاہور بورڈ: میٹرک سالانہ

لاہور بورڈ نے میٹرک کے سالانہ امتحانات کے نتائج کا اعلان کر دیا ،کامیابی کا تناسب 66فیصد رہا

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور کے تعلیمی بورڈ نے میٹرک کے سالانہ امتحانات کے نتائج کا اعلان کر دیا جبکہ بھارتی ریاست جھارکھنڈ میں طلبہ نے کم نمبر دینے پر استاد / پرنسپل اور کلرک پر ایسا غیر یقینی طریقے سے تشدد کیا جس کی مثال ماضی قریب میں نہیں ملتی یا پھر بہت کم ہی کہیں پر ایسا واقعہ ریکارڈ ہوا ہوگا

Our Newscaster Annie Khan
لڑکیوں کی کامیابی کا تناسب 74 ، لڑکوں کا 57 فیصد رہا، بورڈ میںپہلی دو پوزیشز لڑکیاں لے اڑیں

مجموعی طور پر کامیابی کا تناسب 66فیصد رہا لڑکیوں کی کامیابی کا تناسب 74 جبکہ لڑکوں کا 57 فیصد رہا،

بورڈ میں پہلی دو پوزیشز لڑکیاں لے اڑیں چیئرمین لاہور بورڈ پروفیسر ڈاکٹر مرزا حبیب نے نتائج کا اعلان کیا۔

انہوں نے کہا کہ نتائج سو فیصد سرکاری اساتذہ نے تیار کئے، امتحانی نظام میں ریفارمز لارہے ہیں۔

پروفیسر ڈاکٹر مرزا حبیب نے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ کامیابی کا تناسب 66 فیصد تناسب رہا،

سب زیادہ 1095 نمبر حاصل کیے گئے، 1095 نمبر حاصل کرنے والے طلبہ کی تعداد 2 ہے،

دوسرے نمبر پر1094نمبر حاصل کرنیوالے طلبہ کی تعداد3ہے جبکہ تیسرے نمبر پر 1093 نمبر والے طلبا کی تعداد 10 ہے۔

لڑکیوں کی کامیابی کا تناسب 74 فیصد اور لڑکوں کا 57 فیصد رہا۔

رواں سال پاس ہونے والے بچوں میں لڑکیوں کی تعداد زیادہ ہے، امتحان میں ایک لاکھ پچاسی ہزار بچوں نے شرکت کی،

ایک لاکھ33 ہزار بچوں نے امتحان پاس کیا، 52 ہزار 841 بچے امتحان میں کامیاب نہ ہوسکے۔

مریم یوسف اور صبا ثاقب نے 100 میں سے 1095نمبر حاصل کئے ۔ مہد ساجد ، حنان بیگ اور

ایمن عنصر نے بورڈ میں دوسرے نمبر پرسب سے زیادہ 1094جبکہ تیسرے نمبر پر 10طلبہ محمد حمزہ مختار،

عبیرہ جاوید، بریرہ عاطف، عاصمہ اعجاز، آمنہ عطائ ،محمد عواب صدیقی، سائمل حق، ریمن عاصم، ناصرہ کامران اور محمد حمزہ مختارنے1093نمبر حاصل کئے۔

بھارت، کم نمبر دینے پر طلبہ کا استاد پر درخت سے باندھ کر تشدد

امتحان میں کم نمبر ملنےپربھارتی ریاست جھارکھنڈ میں طلبہ نےاستاد اور کلرک کو درخت سے باندھ کرتشدد کانشانہ بناڈالا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق پریکٹیکل میں کم مارکس ملنے پر 9ویں جماعت کے طلبہ نے دلبرداشتہ ہوکر استاد اور اسکول

کے کلرک کو درخت سے باندھ کر تشدد کا نشانہ بنایا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ 32 میں سے 11 طلبہ کا (DD) گریڈ آیا ہے جسے فیل ہونے کے مترادف سمجھا جاتا ہے

تاہم اسکول انتظامیہ کی جانب سے طلبہ کا مستقبل خراب ہونے کے خدشے پر اس واقعے کی کوئی

ایف آئی آر درج نہیں کروائی گئی ہے۔

تحقیقاتی افسر کے مطابق اسکول میں 200 طلبہ زیر تعلیم ہیں، جن میں سے بیشتر اس واقعے میں ملوث ہیں۔

متاثرہ استاد جو کہ اسکول کے ہیڈ ماسٹر بھی رہ چکے ہیں انہوں نے امن و امان برقرار رکھنے کی

خاطر سزا کے طور پر جماعت 9 اور 10 کی کلاسیں دو دن کے لیے معطل کردیں۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں، مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ جتن نیوز اردو انتظامیہ

لاہور بورڈ: میٹرک سالانہ

= پڑھیں = دنیا بھر سے مزید تازہ ترین اور اہم خبریں

عینی خان

عینی خان پنجاب یونیورسٹی کی ہونہار طالبہ ہیں، نیوز مانیٹرنگ میں تجرے کے حامل ہیں، (جرنل ٹیلی نیٹ ورک ) کی اردو نیوز سروس ( جے ٹی این پی کے ) میں بطورِ آڈیو نیوز کاسٹر خدمات سر انجام دے رہی ہیں۔ ( جتن انتظامیہ )

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: