سوشل میڈیا کا غلط استعمال جرم قرار، قید و جرمانے کی سزائیں مقرر

کویت سٹی: جے ٹی این پی کے نیوز: سوشل میڈیا کا غلط استعمال جرم

کویت میں سوشل میڈیا پر کسی کی بھی تصویر یا ویڈیو شائع کرنا بڑا جرم بن گیا، جس پر 2

سال قید یا 5 ہزار کویتی دینار جرمانہ ہو سکتا ہے اور بعض صورتوں میں دونوں سزائیں بھی

ہو سکتی ہیں۔

بغیر اجازت کسی کی تصویر،ویڈیو شیئر کرنا یکسر منع

مقامی میڈیا کے مطابق کویت میں جو شخص جان بوجھ کر دوسروں کی اجازت کے بغیر ان کی تصاویر

کھینچ کر ان کی توہین یا بدنامی کرتا ہے اور کسی فرد کی توہین کرنے کی نیت سے تصاویر یا

ویڈیوز کو سوشل میڈیا پر پھیلاتا ہے تو اس کو سزا اور جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا۔

مثبت پہلو کی صورت میں معاملے کا فیصلہ عدالت کریگی،اٹارنی جنرل

اس حوالے سے اٹارنی محمد دھر العتیبی نے ایک مقامی عربی اخبار کو بتایا کہ کسی واقعے یا معلومات کو

ظاہر کرنا جو مفید ہوں اور جس سے کسی ایسی چیز کی نشاندہی ہوتی ہو جو کسی مسئلے کو اجاگر

کرتا ہو جن میں کسی بھی چوری یا حملے کی فلم بندی بھی شامل ہے تو یہ چیز مثبت حفاظتی پہلو میں

آتی ہے تاہم جہاں تک ایسے شخص کا تعلق ہے جس نے اپنی حفاظت یا کسی چیز کا دفاع کرنے

کیلئے لوگوں کی رضا مندی کے بغیر تصویر کھنچی یا فلم بندی کے علاوہ کوئی اور راستہ نہیں ملا

تو اس صورت میں یہ معاملہ جج پر چھوڑ دیا گیا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ 2014 کے قانون نمبر

37 کے آرٹیکل 70 کی شق (C) میں کہا گیا ہے کہ جو بھی شخص جان بوجھ کر کسی کے علم یا

رضا مندی کے بغیر کسی ڈیوائس یا دیگر ذرائع سے اس کی تصویر یا ویڈیو لیے کر دوسروں کو

ناراض اور بدنام کرتا ہے تو اسے 2 سال سے زیادہ کی مدت کے لیے قید کی سزا دی جائے گی

جبکہ زیادہ سے زیادہ جرمانہ 5000 دینار اور کم از کم 500 کویتی دینار یا یہ دونوں سزائیں

ہو سکتی ہیں۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں،
مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ
جتن نیوز اردو انتظامیہ

سوشل میڈیا کا غلط استعمال جرم ، سوشل میڈیا کا غلط استعمال جرم

= پڑھیں = سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سے متعلق مزید اہم خبریں

عینی خان

عینی خان پنجاب یونیورسٹی کی ہونہار طالبہ ہیں، نیوز مانیٹرنگ میں تجرے کے حامل ہیں، (جرنل ٹیلی نیٹ ورک ) کی اردو نیوز سروس ( جے ٹی این پی کے ) میں بطورِ آڈیو نیوز کاسٹر خدمات سر انجام دے رہی ہیں۔ ( جتن انتظامیہ )

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: