لاہور کے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کی کمی، انستھیزیا انجیکشنر نایاب

سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کی کمی

لاہور(جے ٹی این پی کے)لاہور کے سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کو بدستور ادویات کی کمی کا

سامنا ہے، انستھیزیا کی ادویات اور انجیکشنز بھی نایاب ہو گئے ہیں، مریضوں کو کئی روز سے

ادویات میسر نہیں۔لاہور کے میو ہسپتال میں مریض اور لواحقین ادویات کیلئے در بدر ہونے لگے،

کئی روز سے ہسپتال میں ادویات دستیاب ہی نہیں، مریض بازار سے ادویات خریدنے پر مجبور ہیں۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق انستھیزیا کے انجیکشنز کی عدم دستیابی کے باعث مریضوں کے آپریشن

متاثر ہو رہے ہیں، بعض مریضوں کے لواحقین بازار سے انستھیزیا خرید کر آپریشن کروانے پر

مجبور ہیں، ذرائع کے مطابق سروسز اور جناح ہسپتال کو بھی انستھیزیا کی کمی کا سامنا ہے۔

جنرل ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر خالد کے مطابق سروسز، میو اور جناح ہسپتال کو 300 کے قریب

انستھیزیا کی خوراکیں جنرل ہسپتال نے ادھار پر دی ہیں،

جیسے ہی ان ہسپتالوں کے پاس سٹاک

یہ بھی پڑھیں : منکی پاکس سے پہلی موت، وزیر صحت نے تصدیق کردی

آئے گا وہ انستھیزیا جنرل ہسپتال کو واپس کر دیں گے۔میو ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ادویات

کی خریداری نہیں ہوئی، سپلائی ملتے ہی مریضوں کو ادویات کی فراہمی شروع کر دیں گے۔

محکمہ صحت پنجاب نے بھی میو ہسپتال میں ادویات کی کمی پرچپ سادھ رکھی ہے، کوئی

ذمہ دار بات کرنے کیلئے تیار نہیں۔دوسری جانب میڈیکل سٹور مالکان کا کہنا ہے کہ بخار،

مرگی، جگر، بلڈ پریشر اور خون پتلا کرنے والی ادویات کی سپلائی نہیں آ رہی، تین ماہ سے

یہ ادویات نایاب ہیں۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں،

admin

پاکستان سمیت دنیا بھر میں ہونے والے اہم حالات و واقعات اور دیگر معلومات سے آگاہی کا پلیٹ فارم

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: