دہشتگردوں کا پشاور پر بڑا وار، پولیس لائنز لہو لہو،65 شہید،درجنوں زخمی

پشاور: عمران رشید خان : دہشتگردوں کا پشاور پر بڑا وار،

صوبائی دارلحکومت پشاور کے ریڈ زون میں واقع ملک سعد شہید پولیس لائنز کی جامع مسجد میں خود کش بم دھماکہ کے نتیجہ میں شہدا کی تعداد 65 جبکہ 140 سے زائد شدید زخمی ہسپتال میں زیر علاج ہیں اور ان میں کئی کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے، 27 شہید پولیس اہلکاروں کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی ہے، جبکہ جائے وقوعہ پر امدادی کارروائیاں تاحال جاری ہیں۔

کابل، نماز جمعہ کے وقت دھماکہ، 9 نمازی شہید،41 زخمی

تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت پشاور کے ریڈ زون

میں واقع پولیس لائنز کی مسجد میں خود کش بمبار نے دوپہر کی

نماز کے وقت امام مسجد کے عین پیچھے پہلی صف میں کھڑے ہو

کر خود دھماکے سے اُڑا دیا جس سے ہر طرف تباہی مچ گئی۔

دھماکے کے نتیجہ میں مسجد کی چھت منہدم ہو گئی، جس کے نیچے میں درجنوں افراد ملبے تلے دب گئے۔

واقعے کی اطلاع ملنے پر پولیس اور سکیورٹی فورسز نے پولیس لائن جانے والے تمام راستے سیل کردیئے۔

ریسکیو 1122 اور دیگر امدادی اداروں کی ٹیموں نے نعشوں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا۔

کیا ہم بیس سال پیچھے چلے گئے۔ ۔ ۔؟

ملک سعد شہید پولیس لائنز پشاور کے ریڈ زون میں سول سیکرٹریٹ کے سامنے، سنٹرل جیل پشاور سے متصل ہے۔

جس میں ضلع پشاور کی پولیس کا ہیڈ کوارٹر، سی سی پی او پشاور، ایس ایس پی آپریشنز، ایس ایس پی انوسٹی گیشن،

ایس پی سیکورٹی و دیگر افسران کے دفاتر کیساتھ ساتھ کانٹرٹیررازم ڈیپارٹمنٹ ( سی ٹی ڈی )،

پولیس ٹیلی کمیونیکیشن ڈیپارٹمنٹ اور فرنٹیئر ریزرو پولیس ( ایف آرپی ) کے ہیڈکوارٹرز واقع ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق ملک سعد شہید پولیس لائنز کی جامع مسجد

میں پیر کے روز اما م مسجد صاحبزادہ نورالامین نے جیسے ہی اللہ

اکبر کہا اس کیساتھ ہی ایک زوردار دھماکہ ہوا، دھماکہ اتنا شدید تھا

کہ اس کی آواز دور دور تک سنی گئی، مسجد کی چھت منہدم ہو گئی۔

دھماکہ کیساتھ ہی دھویں اور گرد کے بادل نے مسجد کو اپنی لپیٹ میں

لے لیا، چاروں طرف زخمی و جاں بحق ہونیوالوں کے اعضاء بکھر گئے

دھماکہ کے فوراََ بعد پولیس لائنز جانیوالے تمام راستوں کو سیل کر دیا

گیا اور امدادی سرگرمیوں کیلئے پولیس، ریسکیو 1122 و دیگر امدادی

اداروں کے کارکن اور ایمبولنس گاڑیاں موقع پر پہنچ گئیں جہاں سے

جاں بحق افراد کی لاشوں و زخمیوں کو ہسپتال منتقلی کا کام شروع کیا گیا۔

کیا حکومت کو کسی بڑے سانحے کا انتظار ہے ، ؟

خیبرپختونخوا حکومت نے پشاور کے تمام بڑے ہسپتالوں میں ایمرجنسی

نافذ کر کے ڈاکٹرز، نرسوں اور دیگر طبی عملے کو ہنگامی ڈیوٹی پر طلب کر لیا۔

ہسپتال عملہ کی جانب سے لوگوں سے مسلسل خون کے عطیات دینے کے اعلان کئے جاتے رہے۔

ابتدائی رپورٹ کے مطابق دھماکہ خود کش تھا۔ کالعدم ٹی ٹی پی نے دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

خون کے عطیات کی اپیل پرشہری بڑی تعدد میں ہسپتالوں کے باہر خون دینے کیلئے جمع ہو گئی۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق حملہ آور تھانے کے مرکزی دروازے سے داخل ہو کر تین سے چار حفاظتی لائنز عبور کر کے مسجد تک پہنچا۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں،
مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ
جتن نیوز اردو انتظامیہ

دہشتگردوں کا پشاور پر بڑا وار، , دہشتگردوں کا پشاور پر بڑا وار، , دہشتگردوں کا پشاور پر بڑا وار، , دہشتگردوں کا پشاور پر بڑا وار،

= پڑھیں = خیبر پختونخوا سے مزید اہم خبریں

Imran Rasheed

عمران رشید خان صوبہ خیبر پختونخوا کے سینئر صحافی اور سٹوری رائٹر/تجزیہ کار ہیں۔ کرائمز ، تحقیقاتی رپورٹنگ ، افغان امور اور سماجی مسائل پر کافی عبور رکھتے ہیں ، اس وقت جے ٹی این پی کے اردو کیساتھ بحیثیت بیورو چیف خیبر پختونخوا فرائض انجام دے رہے ہیں ۔ ادارہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: