دبئی میں بیروزگار پاکستانی خاتون پر قسمت ہوئی مہربان، کیسے جان کر حیرت ہوگی

دبئی (جے ٹی این پی کے نیوز) دبئی میں بیروزگار پاکستانی خاتون

متحدہ عرب امارات کی معورف ریاست دبئی میں ایک بیروزگار پاکستانی خاتون
اپنی قسمت پر حیران رہ گئی، محظوظ قرعہ اندازی میں ایک لاکھ درہم جیتنے
والی عارفہ نے انعامی رقم کو زندہ رہنے کیلئے بڑا سہارا قرار دے دیا۔

ہفتہ وار لائیو محظوظ ریفل ڈرا میں 100,000 درہم جیت لیے

خلیج ٹائمز کے مطابق پاکستان سے تعلق رکھنے والی 47 سالہ عارفہ نے 63
ویں ہفتہ وار لائیو محظوظ ریفل ڈرا میں 100,000 درہم جیت لیے، پاکستانی
خاتون نے کہا کہ وہ اپنے ہم وطن جنید کی آن لائن 50 ملین درہم کی تاریخی
جیت کی کہانی دیکھ کر محظوظ میں شرکت کیلئے متاثر ہوئی کیونکہ میں
پریشانیوں میں ڈوبی ہوئی تھی اور محظوظ میرا آخری سہارا تھا۔ لیکن مجھے
یقین نہیں آ رہا کہ اس کا نتیجہ نکل گیا۔

رقم ضرورتمندوں کی مدد کیلیے بھی استعمال کروںگی

بتایا گیا ہے عارفہ کا اس رقم کیساتھ اپنا کاروبار شروع کرنے کا ادارہ ہے
لیکن اس نے کہا ہے کہ وہ اس رقم کو ضرورتمند خاندانوں کی مدد کیلیے بھی
استعمال کرے گی، حالانکہ وہ خود کوویڈ 19 کی وجہ سے پچھلے ڈیڑھ سال
سے بیروزگار ہے۔ عارفہ نے کہا کہ جب بھی میرے پاس کچھ پیسہ آتا ہے
چاہے وہ تھوڑا ہی کیوں نہ ہو میں اس میں سے کچھ ضرورتمند خاندانوں کو
دیتی ہوں-

آن لائن ملبوسات کا کاروبار شروع کرنے کا ارادہ

انہوں نے کہا محظوظ جیتنے سے مجھے آخر کار زندہ رہنے اور اپنے آن
لائن ملبوسات کا کاروبار شروع کرنے میں مدد ملے گی جو ایک رکاوٹ کا
شکار تھا جبکہ انعامی رقم میں سے کچھ ان کی والدہ کو بھی پاکستان میں
وطن واپس بھیجی جائے گی۔ ادھر متحدہ عرب امارات میں کرونا کی وجہ
سے سکیورٹی گارڈ کی نوکری کرنیوالے پاکستانی انجینئر کے بھی دن پھر
گئے-

= پڑھیں = زیادتی کے شکار خواتین و بچوں کیلئے کمیٹی قائم

پاکستانی شہری مبشر نے محظوظ قرعہ اندازی میں ایک لاکھ درہم جیت لیے،
60 ویں ہفتہ وار لائیو محظوظ ڈرا نے اپنے جیتنے والوں کی زندگیوں کو بدل
دیا جس نے امید اور قسمت کے بارے میں ان کے خیالات کو تبدیل کر دیا،

= ضرور پڑھیں = عالمی نظریہ آزادی نسواں کی حقیقت

پاکستانی شہری مبشر کے لیے ریفل ڈرا میں 100,000 درہم جیتنا وہ لائف
لائن رہا جس کی وہ مہینوں سے تلاش کر رہے تھے جب زندگی نے انھیں
متعدد دھچکوں سے دوچار کیا، مبشر جیتنے والی رقم کو اپنے کاروبار کو
بحال کرنے، اپنے پیشہ ورانہ خوابوں کو دوبارہ شروع کرنے اور اپنے
بوڑھے والد کو علاج کیلئے دبئی لانے کیلئے استعمال کرے گا، یہ اپنے
والد اور خاندان کو گھر واپس فراہم کرنے کا خواب تھا جس نے فرض شناس
بیٹے کو سکیورٹی گارڈ کی نوکری قبول کرنے پر مجبور کیا۔

= مزید پڑھیں = انوکھی محبت کی سچی کہانی ” کلپنا ”

دبئی کے 38 سالہ رہائشی نے کہا کہ میں ایک الیکٹرانکس انجینئر ہوں
جس نے اپنے تکنیکی خدمات کے کاروبار کو روک دیا اور کرونا کے
معاشی ردعمل کی وجہ سے ایونٹ کے سکیورٹی گارڈ کی نوکری سنبھالی،
میرے والد کام کی جگہ پر ایک حادثے کا شکار ہوئے جس سے ان کے
چہرے پر زخم آئے اور وہ چلنے پھرنے کے قابل نہیں رہے، انہوں نے تب
سے گھر نہیں چھوڑا، انکی زندگی اسے واپس دینے کا راستہ تلاش کرنا
میرا خواب ہے۔

۔۔۔ نوٹ ۔۔۔ قارئین ہماری کاوش پسند آئے تو ’’ فالو ‘‘ کریں ، مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ،
جتن انتظامیہ

دبئی میں بیروزگار پاکستانی خاتون ، دبئی میں بیروزگار پاکستانی خاتون ، دبئی میں بیروزگار پاکستانی خاتون

admin

پاکستان سمیت دنیا بھر میں ہونے والے اہم حالات و واقعات اور دیگر معلومات سے آگاہی کا پلیٹ فارم

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: