خواتین کو بااختیار بنانا ہمارا ہدف، ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی

ایجوکیشن نیوز/ خواتین کو با اختیار

خواتین کی تعلیم وتربیت کسی بھی معاشرے کی ترقی میں کلیدی کردار کی حامل ہے، جب ہماری خواتین تعلیم یافتہ ہونگی تو سماجی اور معاشی ترقی ممکن ہوسکے گی۔

ویمن امپاورمنٹ ہمارا ہدف ہے جس کے لئے ہم عملی اقدامات اٹھارہے ہیں

ویمن یونیورسٹی صوابی میں طالبات کیلئے بہت ساری اسکالرشپ دستیاب ہیں اور ہم انڈسٹری کیساتھ بھی روابط میں رہتے ہیں جن کی جانب سے بھی ہمیں اسکالرشپ ملتی رہتی ہیں۔

ضرورت اس امر کی ہے کہ انڈسٹریز کے علاوہ صاحب استطاعت افراد بھی جامعات کو اسکالرشپ فراہم کریں۔

ان خیالات کا اظہار وائس چانسلر ویمن یونیورسٹی صوابی پروفیسر ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی نے اسکالرشپ ایوارڈ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

فیلڈ میں کچھ کر دکھانے کیلئے انڈسٹریز کا تجربہ ناگزیر

نیسٹ نے ویمن یونیورسٹی صوابی کے شعبہ آرٹس اینڈ ڈیزائن کی طالبات کو 19 اسکالرشپ فراہم کی ہیں

جن میں انکو فیس کے علاوہ ماہانہ وظیفہ بھی ملے گا۔

انڈسٹریز اور جامعات کے مابین اشتراک وقت کی اہم ضرورت

اس موقع پر ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی نے کہا کہ اگرچہ پروفیشنل ڈگری پروگرام کے طلبہ کا انڈسٹریز کے تجربہ ناگزیر ہے،

تبھی وہ فیلڈ میں جا کر اپنی صلاحیتوں کا لوہا منواسکتے ہیں۔

جامعات کو چاہئےکہ انڈسٹریز کیساتھ وسیع تر روابط کو فروغ جبکہ اساتذہ و طالبات کو انڈسٹریز کا ایکسپوژر دیں،
اس کے علاوہ انڈسٹری کے ماہرین کو بھی جامعات میں طلبہ کی تربیت کے لئے دعوت دی جائے

پروفیسر ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی کا مختصر تعارف

پروفیسر ڈاکٹر شاہانہ عروج کاظمی پی ایچ ڈی، پروفیسر اور چیئر پرسن، پی ایچ ڈی، وائس چانسلر، ویمن یونیورسٹی، صوابی، کے پی کے، پاکستان

اعلیٰ تعلیم اور تحقیقی اداروں میں تدریس، تحقیق اور انتظامیہ کا 44 سال سے زیادہ کا بھرپور تجربہ ہے۔

انکے امپیکٹ فیکٹر کے ساتھ سائنسی جرائد میں اپنے تحقیقی نتائج پر 100 سے زیادہ مقالے شائع ہوچکے ہیں۔

انہوں نے مالیکیولر بائیولوجی، بائیولوجیکل، کیمیکل سیفٹی اور بائیو سیکیورٹی میں مصدقہ تربیت حاصل کی،

کئی بین الاقوامی اداروں میں BSL-2، BSL 3 اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ کا استعمال کرتے ہوئے رسک اسسمنٹ کے ساتھ ساتھ امریکن بائیولوجیکل

سیفٹی ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام کورسز میں شرکت کی۔

امریکا. مائیکرو بیالوجی کے شعبے میں ان کی خدمات کے اعتراف میں، امریکن سوسائٹی فار مائیکرو بیالوجی نے انہیں 2011 میں کنٹری
لائزن آف دی ایئر ایوارڈ سے نوازا۔ اور 2017 میں اے ایس ایم ایمبیسیڈر آف دی ایئر ایوارڈ برائے پاکستان حاصل کیا

نیشنل ٹاسک فورس آن ویکسین ڈویلپمنٹ اینڈ ٹیکنیکل کمیٹی (TAC) کے نیشنل بائیو سیفٹی سینٹر، وزارت ماحولیات، حکومت پاکستان کی

رکن کے طور پر، انہوں نے پاکستان میں محفوظ اور کفایت شعاری ویکسین کی موثر پیداوار، حفاظت کے لیے قومی رہنما خطوط تیار کرنے

میں اپنا حصہ ڈالا ہے۔

جین کی منتقلی، جینیاتی ٹیکنالوجیز، ڈی این اے ریسرچ کا اطلاق تحقیق میں سائنسی، اخلاقی، سماجی اور حیاتیاتی تحفظ کے مسائل کو حل
کرتا ہے اور مائیکرو بائیولوجیکل، ہیومن، اینیمل اور پلانٹ بائیو سیفٹی پریکٹسز میں تربیت فراہم کرتا ہے۔

بیداری و تربیت فراہم کرنے، بائیو سیفٹی و بائیو سکیورٹی کی ضروریات کی نشاندہی کرنے اور قومی ادارہ جاتی صلاحیت کی تعمیر کے لیے

انہوں نے کامیابی کے ساتھ 1974 میں پاکستان سوسائٹی فار مائیکرو بایولوجی (PSM) اور 2007 میں ASM/ABSA/BEP – USA،

PMRC، PARC، COMSTEC، پاکستان کے تعاون سے بائیو سیفٹی ایسوسی ایشن آف پاکستان (www.bsapk.org) قائم کی۔

بائیو سیفٹی ایسوسی ایشن آف پاکستان (BSAP) کی بانی چیئرمین کے طور پر جو کہ ABSA سے ملحق ہے،

وہ 12 Int کا انعقاد اور مائکرو جیولوجی کی کانفرنسیں سمیت مختلف ہیلتھ کیئر ، ایگریکلچراور اکیڈمک ریسرچ انسٹی ٹیوشنز

میں 27 سو سے زائد ممبران کی مدد سے 58 بائیو سیفٹی اور بائیو سکیورٹی پر تربیتی ورکشاپس کرانے میں کامیاب رہی ہیں۔

خبروں/ بیانات اور اشتہارات کیلئے ھمارے بیورو چیف خیبرپختونخوا سے رابطے کیلئے وٹس ایپ بٹن استعمال کریں شکریہ

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں، مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ جتن نیوز اردو انتظامیہ

خواتین کو با اختیار

= — = تعلیم سے متعلق مزید خبریں (== پڑھیں ==)

Imran Rasheed

عمران رشید خان صوبہ خیبر پختونخوا کے سینئر صحافی اور سٹوری رائٹر/تجزیہ کار ہیں۔ کرائمز ، تحقیقاتی رپورٹنگ ، افغان امور اور سماجی مسائل پر کافی عبور رکھتے ہیں ، اس وقت جے ٹی این پی کے اردو کیساتھ بحیثیت بیورو چیف خیبر پختونخوا فرائض انجام دے رہے ہیں ۔ ادارہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: