حجاب پہننے پر فخر، مذہب کے نام پر امیتازی سلوک سراسر غلط، نبیلہ سید

نئی دہلی:جے ٹی این پی کے نیوز: حجاب پہننے پر فخر

بھارتی نژاد امریکہ کی ریاست الینوائے سے نو منتخب رکن اسمبلی مسلم امریکی خاتون نبیلہ سید کا کہنا ہے کہ مسلم ہونے اور حجاب پہننے پر مجھے فخر کا ہے، تاہم کسی کو حجاب پہننے یا نہ پہننے پر مجبور نہیں کیا جا سکتا۔

کے ایم سی کی رپورٹ کے مطابق نبیلہ سید نے امریکہ میں منعقد ہونے

والے وسط مدتی انتخابات میں ریاست الینوائے ( Illinois ) کی جنرل

اسمبلی کیلئے منتخب ہو کر تاریخ رقم کی ہے۔ 23 برس کی باحجاب نبیلہ

امریکہ کی ریاستی اسمبلی کیلئے منتخب ہونے والی کم عمر ترین رکن ہیں۔

امریکی وسط مدتی انتخابات میں تاریخ رقم کرنیوالی بھارتی نژاد امریکی مسلم خاتون

ڈیموکریٹک پارٹی سے وابستہ نبیلہ سید نے ریپبلیکن پارٹی کے امیدوار کرس بوس کے مقابلے میں 52.3 فیصد ووٹ حاصل کیے۔

ایک بھارتی ٹی وی نے ان سے ویڈیو کانفرسنگ کے ذریعے گفتگو کی،

جس میں انہوں نے کہا کہ میں یہ واضح کرنا چاہتی ہوں کہ حجاب پہننا میری مرضی تھی،

آپ کسی پر مذہب کو مسلط نہیں کر سکتے، کسی کو حجاب پہننے پر مجبور نہیں کر سکتے،

اور نہ کسی کی حجاب نہ پہننے کیلئے مجبور کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میں ہر دن حجا ب پہننے اور مسلمانوں کی نمائندگی کرنے پر فخر محسوس کرتی ہوں۔

نبیلہ سید نے مزید کہا کہ کسی کی آواز کو دبانا غلط ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت میں یہ بات یقینی بنانے کی ضرورت ہے کہ کسی بھی شخص کے ساتھ اس کے مذہب کی وجہ سے امتیازی سلوک نہ کیا جائے۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں،
مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ
جتن نیوز اردو انتظامیہ

حجاب پہننے پر فخر ، حجاب پہننے پر فخر

= پڑھیں = دنیا بھر سے مزید تازہ ترین اور اہم خبریں

A.R.Haider

شعبہ صحافت سے عرصہ 25 سال سے وابستہ ہیں، متعدد قومی اخبارات سے مسلک رہے ہیں، اور جرنل ٹیلی نیٹ ورک کی اردو سروس جتن نیوز اردو کی ٹیم کے بھی اہم رکن ہیں۔ جتن انتظامیہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: