بجلی 5.95 روپے فی یونٹ مہنگی، صارفین پر 50 ارب روپے کا بوجھ پڑیگا

اسلام آباد (جے ٹی این پی کے) بجلی 5.95 روپے فی یونٹ مہنگی

نیشنل پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں ماہِ جنوری کے لیے بجلی 5 روپے95 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی.

اضافے کا اطلاق لائف لائن اور کے-الیکٹرک کے صارفین پر نہیں ہوگا،

حکومت کی اعلان کردہ سبسڈی کے تحت 3 روپے 10 پیسے صارف سے وصول کیے جائیں گے ،

بقیہ بوجھ وفاقی حکومت برداشت کرے گی۔

سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) نے جنوری 2022 کی ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی 6 روپے 10 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی درخواست کی تھی.

جس پر نیپرا نے 28 فروری کو سماعت کی تھی۔

نیپرا نے سماعت مکمل کرنے کے بعد بجلی 5 روپے 95 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی منظوری دی.

جس کے بعد جمعرات کو اس کا نوٹیفیکیشن جاری کردیا گیا۔

اضافے کا صارفین پر 50 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا تاہم جنرل سیلز ٹیکس (جی ایس ٹی) شامل کرنے کے بعد یہ اضافہ 58 ارب روپے سے زیادہ بنے گا۔

یہ بھی پڑھیں : آئی ایم ایف سے جان خلاصی ، حکومت کا عوام سے رجوع کا فیصلہ

خیال رہے کہ 28 فروری کو قوم کے نام خطاب میں وزیراعظم نے بجلی 5 روپے فی یونٹ سستی کرنے کا اعلان کیا تھا

اس سلسلے میں 2 روز قبل ہوئے اجلاس میں کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے 4 ماہ (مارچ سے جون) کی ریلیف مدت کے لیے بجلی کی بنیادی شرح میں 5 روپے فی یونٹ کمی کی منظوری دی تھی۔

مذکورہ ریلیف پیکج کا اطلاق لائف لائن صارفین کے سوا تمام کمرشل اور گھریلو نان ٹائم آف یوز کے صارفین پر ہوگا جن کا ماہانہ 700 یونٹس تک کا استعمال ہے،

اس پیکج کے لیے ایک کھرب 36 ارب روپے کاتخمینہ لگایا گیا ہے۔

سمری کے مطابق کہ حکومت ماہانہ فیول لاگت ایڈجسٹمنٹ (ایف سی اے) کی حد 3.10 روپے کرے گی.

جو فی الحال دسمبر 2021 کی کھپت کے حساب سے تمام صارفین پر لاگو ہے۔

جنوری کی کھپت کے لیے نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے پہلے ہی 5.95 روپے فی یونٹ کو حتمی شکل دے دی تھی.

جس پر عمل درآمد نہیں ہوگا کیونکہ پہلے سے موجود 3.10 روپے کی فیول لاگت ایڈجسٹمنٹ صارفین سے وصول کی جائے گی.

جبکہ بقیہ 2.85 روپے فی یونٹ سبسڈی کے طور پر بجٹ سے ادا کیا جائے گے۔

دوسری جانب نیپرا نے وفاقی حکومت کی جانب سے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کی شرائط کے تحت بجلی کے بنیادی ٹیرف میں مزید 95 پیسے فی یونٹ اضافے کی درخواست بھی منظور کرلی

اور فیصلہ نوٹفیکیشن کے لیے وفاقی حکومت کو ارسال کردیا۔

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

نیپرا کے فیصلے کے مطابق بجلی کے بنیادی ٹیرف میں اوسط 20 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی ہے.

جبکہ مختلف سلیبز کے لیے یہ اضافہ 8 سے 95 پیسے تک فی یونٹ ہوگا۔

ان سیلبز کے مطابق بجلی کے 100 یونٹ استعمال پر 8 پیسے، 101 سے 200 یونٹ تک استعمال پر 18

پیسے،201 سے 300 یونٹ استعمال پر 48 پیسے جبکہ 301 سے 700 یونٹ تک استمال پر 95 پیسے فی

یونٹ اضافے کی منظوری دی گئی ہے۔

اس ضمن میں جاری بیان کے مطابق نیپرا نے حکومتی پالیسی گائیڈ لائنز پر سماعت کے بعد فیصلہ

جاری کیا، اقدام کا مقصد پاور سیکٹر میں سبسڈی کا از سو نو تعین کرنا ہے۔

بجلی 5.95 روپے فی یونٹ مہنگی

 

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: