ایک ماہ کیلئے بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 4.74 روپے اضافہ

بجلی کی قیمتوں میں اضافہ اکتوبر کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا گیا جو دسمبر کے بجلی بلوں میں وصول کیا جائے گا، فیصلے کا اطلاق لائف لائن اور کراچی الیکٹرک سپلائی کارپوریشن کے صارفین پر نہیں ہوگا،نیپرا کا نوٹیفکیشن جاری

اسلام آباد(جے ٹی این پی کے نیوز) مہنگائی کے مارے عوام پر حکومت نے بجلی گرادی، ایک ماہ کیلئے بجلی کے بلوں میں فی یونٹ پونے 4.74 روپے کا اضافہ کردیا گیا،

نیپرا نے باضابطہ نوٹیفکیشن جاری کردیا ۔ جمعرات کو نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق، اکتوبر کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ دسمبر کے بلوں میں

وصول کی جائے گی، اور یہ اضافہ اسی مد میں کیا گیا ہے۔ نیپرا کے مطابق فی یونٹ بجلی 4 روپے 74 پیسے مہنگی کردی گئی ہے، بجلی اکتوبر کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت ممہنگی کی گئی

ہے، صارفین سے اضافہ دسمبر کے بجلی بلوں میں وصول کیا جائے گا، فیصلے کا اطلاق لائف لائن صارفین پر نہیں ہوگا ۔

عالمی منڈی میں تیل اور دوسرے ایندھن کی قیمتوں میں اضافے کا اثر براہ راست بجلی کی پیداواری قیمت پر بھی پڑتا ہے ، نیپرا فیول کی قیمت کے حساب سے ہر ماہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کا تعین کرتا ہے، وزارت توانائی کی وضاحت

نیپرا کے مطابق فیصلے کااطلاق کے الیکٹرک صارفین پر بھی نہیں ہوگا۔وزارت توانائی کا ماہانہ فیول ایڈجسمنٹ سے متعلق بیان بھی سامنے آگیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ 22 نومبرکو بجلی کی قیمت

میں ماہانہ فیول ایڈجسمنٹ کی وضاحت کی تھی، نیپرا میں درخواست ایک مہینے کے دوران استعمال شدہ ایندھن کی مد میں تھی، درخواست پرجمعرا ت کو نیپرا نے باقاعدہ سماعت کے بعد فیصلہ دیا۔

وزارت توانائی کے مطابق موجودہ فیصلے کا بجلی کی قیمت پر کوئی مستقل اثر نہیں پڑے گا، نیپرا ہر مہینے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی عوامی سماعت کرتا ہے، اور بجلی کی قیمت میں مخصوص

مدت کیلئے فیول کی قیمت کا تعین کرتاہے جو کہ مثبت یا منفی ہوسکتی ہے۔وزارت توانائی کا کہنا ہے کہ عالمی منڈی میں تیل اور دوسرے ایندھن کی قیمتوں کا ماہانہ فیول پرائس ایڈجسمٹ پر براہ راست

اثرپڑتا ہے، اس فیصلے کی بنیاد بھی عالمی مارکیٹ میں اکتوبر میں ایندھن کی قیمتوں میں اضافہ ہے۔
بجلی بل

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: