اسلام آبادبلوچستانپاکستانپنجابتازہ ترینخیبر پختونخواسندھ

الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی اسمبلی کے حلقوں میں کتنے ووٹرز؟ تفصیلات جاری

Facebooktwitterpinterestlinkedinrssyoutubetumblrinstagramby feather

پشاور/ اسلام آباد: الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈیجیٹل مردم شماری 2023 کے شائع سرکاری نتائج کے مطابق نئی حلقہ بندیوں کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس صورت میں 90 دن کی آئینی مدت کے دوران عام انتخابات کا انعقاد ناممکن ہے، ساتھ ہی الیکشن کمیشن نے حلقہ بندیوں سے متعلق پلان ترتیب دیتے ہوئے شیڈول جاری کر دیا ہے، جس کے مطابق آج سے نئی حلقہ بندیوں پر کام کا آغاز بھی شروع کر دیا گیا ہے، یہ عمل چار ماہ میں مکمل ہو گا۔

پنجاب میں قومی اسمبلی کا حلقہ نو لاکھ سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن شمال سے حلقہ بندیاں شروع کریگا،

مردم شماری کے مطابق پنجاب کی آبادی بارہ کروڑ چھتر لاکھ سے زائد ہے،

پنجاب کی قومی اسمبلی کی عام 141 نشستیں ہیں۔ اس مناسبت سے پنجاب میں قومی اسمبلی کا حلقہ نو لاکھ سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا۔

بلوچستان میں قومی اسمبلی کے ایک حلقے میں ووٹرز کی تعداد نو لاکھ پچیس ہزار سے زائد ہو گی

مردم شماری کے مطابق بلوچستان کی آبادی ایک کروڑ اڑتالیس لاکھ سے زائد ہے،

بلوچستان کی قومی اسمبلی کی عام 16 نشستیں ہیں، اسلئے وہاں قومی اسمبلی کا حلقہ نو لاکھ پچیس ہزار سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا۔

کے پی کے کا قومی اسمبلی کا ہر حلقہ اٹھ لاکھ اٹھاسی ہزار سے زائد ووٹرز پر منبی ہو گا

مردم شماری کے مطابق کے پی کے کی چار کروڑ سے زائد ابادی ہے،

خیبر پختونخوا ( کے پی کے) کی قومی اسمبلی کی عام 45 نشستیں ہیں۔

آبادی کے تناسب کے لحاظ سے کے پی کے میں قومی اسمبلی کا حلقہ اٹھ لاکھ اٹھاسی ہزار سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا۔

سندھ میں قومی اسمبلی کے حلقے میں ووٹرز کی تعداد نو لاکھ گیارہ ہزار سے زائد ہو گی

مردم شماری کے مطابق سندھ کی آبادی پانچ کروڑ چھپن لاکھ سے زائد ہے،

صوبہ سندھ کی قومی اسمبلی کی عام 61 نشستیں ہیں،

سندھ میں قومی اسمبلی کا حلقہ نو لاکھ گیارہ ہزار سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا۔

اسلام آباد میں قومی اسمبلی کا حلقہ سات لاکھ چھیاسٹھ ہزار سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا

مردم شماری کے مطابق اسلام آباد کی آبادی 23 لاکھ سے زائد ہے،

اسلام آباد کی قومی اسمبلی کی عام 3 نشستیں ہیں۔

ذرائع الیکشن کمیشن کے مطابق اسلام آباد میں قومی اسمبلی کا حلقہ سات لاکھ چھیاسٹھ ہزار سے زائد ووٹرز پر مشتمل ہو گا۔

پرانی حلقہ بندیاں منجمد کر دی گئیں، نئی حلقہ بندیاں کیسے ہوں گی؟، جانیئے تفصیلات

الیکشن کمیشن کے اعلامیے کے مطابق نئی حلقہ بندیوں کیلئے صوبائی حکومتوں اور ادارہ شماریات سے معاونت طلب کر لی گئی ہے،

اس سلسلے میں ضروری احکامات جاری کر دیے گئے ہیں۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری شیڈول کے مطابق حلقہ بندیاں حتمی طور پر 14 دسمبر 2023 کو شائع کی جائیں گی۔

17 اگست 2023 تک ملک کے تمام یونٹس کی حدود منجمد کردی گئی ہیں۔

21 اگست تک اسلام آباد سمیت ہر صوبے کیلئے حلقہ بندیوں کی کمیٹیاں تشکیل دیدی جائیں گی۔

31 اگست تک انتظامی امور نمٹانے کے بعد حلقہ بندیوں کی کمیٹیوں کو یکم تا چار ستمبر تربیت دی جائے گی۔

5 تا 7 ستمبر قومی و صوبائی اسمبلیوں کیلئے ڈسٹرکٹ کوٹے کا تعین شیئر کیا جائے گا۔

8 ستمبر تا 7 اکتوبر تک کمیٹیاں ابتدائی حلقہ بندیاں کریں گی،

9 اکتوبر کو حلقہ بندیوں کی ابتدائی رپورٹ شائع کی جائے گی۔

10 اکتوبر تا 8 نومبر تک حلقہ بندیوں کے حوالے سے ہر قسم کے اعتراضات کمیشن کے سامنے دائر کیے جا سکیں گے۔

10 نومبر تا 9 دسمبر تک کمیشن ان اعتراضات پر سماعت کریگا۔

14 دسمبر 2023 کو حتمی حلقہ بندیاں شائع کر دی جائیں گی۔

یاد رہے قبل ازیں مشترکہ مفادات کونسل نے ڈیجیٹل مردم شماری 2023 کے نتائج کی منظوری دی تھی،

جس کے بعد یہ یقینی ہو گیا تھا کہ عام انتخابات کا انعقاد اس سال نہیں ہو سکے گا،

کیونکہ منظوری کے بعد انتخابات کا انعقاد حلقہ بندیوں کے بعد ہی ہو گا۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں،
مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ
جتن نیوز اردو انتظامیہ

الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی ، الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی ، الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی ، الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی , الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی , الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی , الیکشن آئندہ سال، صوبوں میں قومی ,

= پڑھیں = پاکستان بھر سے مزید اہم اور تازہ ترین خبریں

About Author

Facebooktwitterpinterestlinkedinrssyoutubetumblrinstagramby feather
Facebooktwitterredditpinterestlinkedintumblrmailby feather

Imran Rasheed

عمران رشید خان صوبہ خیبر پختونخوا کے سینئر صحافی اور سٹوری رائٹر/تجزیہ کار ہیں۔ کرائمز ، تحقیقاتی رپورٹنگ ، افغان امور اور سماجی مسائل پر کافی عبور رکھتے ہیں ، اس وقت جے ٹی این پی کے اردو کیساتھ بحیثیت بیورو چیف خیبر پختونخوا فرائض انجام دے رہے ہیں ۔ ادارہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے