اسرائیل میں 1200 سال سے زائد قدیم مسجد، پُرتعیش عمارت کے آثار دریافت

تل ابیب (جے ٹی این پی کے نیوز) اسرائیل، قدیم مسجد پُرتعیش عمارت دریافت

اسرائیل میں بارہ سو سال سے زیادہ قدیم مسجد اور پر تعیش شیشے کے نوادرات سے مزئین سرکاری

عمارت کے آثار دریافت ہوئے ہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جنوبی شہر راحت میں نئی

آبادی کی تعمیر کے دوران دریافت ہونے والے بارہ سو سال قدیم مسجد کے آثار اس خطے سے ملے ہیں

جسے مسلمانوں نے ساتویں صدی کے ابتدائی نصف میں فتح کیا تھا، حکام کے مطابق مسجد اور سرکاری

عمارت کے ملنے والے اثار پر مزید تحقیقات جاری ہیں۔

اسرائیل میں 45 کلومیٹر طویل،9 میٹر اونچی نئی حفاظتی دیوار کی تعمیر

دوسری طرف اسرائیل نے شمالی مغربی کنارے میں 45 کلومیٹر لمبی اور 9 میٹر اونچی ایک حفاظتی دیوار

کی تعمیر شروع کر دی ہے۔ میڈیار پورٹس کے مطابق اسرائیل کی وزارتِ سلامتی امور کے جاری کردہ ایک

بیان میں کہا گیا کہ بڑی کنکریٹ کی دیوار حفاظتی آلات اور دیگر تکنیکی ذرائع پر مشتمل ہے جس کا مقصد

دراندازی کو روکنا ہے۔ یہ دیوار بیس سال قبل تعمیر کی گئی حفاظتی باڑ کی جگہ لے گی۔ دیوار ایک طرف

فلسطینی گاﺅں سالم سے شروع ہو گی اور اس کا اختتام بیت حیفر پر ہو گا۔

دیوار کی تعمیر کا مقصد اسرائیلی شہریوں کا تحفظ یقینی بنانا قرار

اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے کہا کہ ہم شمالی سرحد پر اپنی آپریشنل سرگرمیوں کے ایک اٹوٹ حصے

کے طور پر سلامتی کو مضبوط بنا کر اسرائیلی ہوم فرنٹ کو محفوظ بنانے کیلئے کام کر رہے ہیں۔ اس کیساتھ

ساتھ ہم مزید حفاظتی اقدامات بھی جاری رکھیں گے۔ اسرائیل کے شہریوں کو تحفظ فراہم کرنے کی خاطر کسی

بھی خطرے کا مقابلہ کرنے کیلئے کام کریں گے۔ دیوار کی تعمیر وزارت دفاع کے انجینئرنگ و تعمیراتی شعبے

اور مسلح افواج کی سینٹرل کمانڈ کے تعاون سے کی جا رہی ہے۔ اسرائیلی وزارت دفاع میں بارڈر ڈائریکٹوریٹ

کے سربراہ ایرن اوفیر نے بھی کہا دیوار کی تعمیر کا کام ایک سال تک جاری رہے گا، دیوار کا کوئی بھی بند

حصہ اسرائیل میں داخلے کو سختی سے روکے گا۔ ہم نقاط تماس پر موجود رخنوں کو بند کریں گے۔

قارئین ===> ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپ ڈیٹ رہنے کیلئے (== فالو == ) کریں،
مزید بہتری کیلئے اپنی قیمتی آرا سے بھی ضرور نوازیں،شکریہ
جتن نیوز اردو انتظامیہ

اسرائیل، قدیم مسجد پُرتعیش عمارت دریافت ، اسرائیل، قدیم مسجد پُرتعیش عمارت دریافت

===> مزید دلچسپ اور عجیب وغریب خبریں (== پڑھیں ==)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: